حلیمہ سلطان پر تنقید،یاسر حسین نے یوٹرن لے لیا

حلیمہ سلطان پر تنقید،یاسر حسین نے یوٹرن لے لیا

سٹی 42:ڈرامہ ارطغرل غازی کی اداکار ہ اسرا بلجک’’ حلیمہ سلطان‘‘  کو پی ایس ایل ٹیم زلمی کا برانڈ ایمبیسڈر بنائے جانے پر پاکستانی اداکاروں نے شدید تنقید کی تھی ،یاسر حسین ان میں پیش تھے،انہوں نے موقف اختیار کیا تھا کہ غیرملکی اداکاروں کو پاکستانی ٹیموں کا برانڈ ایمبسڈر بنانا ٹھیک نہیں ہے۔اب کہتے ہیں کہ پاکستان سپر لیگ کی فرنچائز پشاور زلمی کی برانڈ ایمبیسیڈر ترک اداکارہ اسریٰ بلجک کی جگہ ہالی ووڈ اداکارہ انجلینا جولی کو بنایا جائے۔

یاسر حسین کا شمار پاکستان شوبز انڈسٹری کے ان فنکاروں میں ہوتا ہے جو ابتدا ہی سے ترک ڈراما ’’ ارطغرل غازی‘‘ کو پاکستان کے سرکاری ٹی وی چینل پر نشر کرنے کے مخالف ہیں۔چند روز قبل جب معروف پاکستانی موبائل کمپنی نے ترک اداکارہ اسریٰ بلجک ( حلیمہ سلطان) کو اپنا برانڈ ایمبیسیڈر مقرر کیا تھا تو یاسر حسین نے پاکستانی فنکاراؤں کی جگہ ایک غیر ملکی اداکارہ کو ایمبیسیڈر بنانے پر شدید تنقید کی تھی۔ اور اب انہوں نے اسریٰ بلجک کو پی ایس ایل فرنچائز پشاور زلمی کی برانڈ ایمبیسیڈر مقرر کرنے کی بھی مخالفت کردی ہے۔

یاسر حسین کی جانب سے ترک ڈرامے اور ترک فنکاروں پر کی جانے والی تنقید نے سوشل میڈیا پر بھی ایک طوفان کھڑا کردیا ہے۔ اس حوالے سے وی جے انوشے اشرف نے یاسر حسین سے حال ہی میں انسٹاگرام پر بات کی اور ان سے ترک ڈرامے اور ترک فنکاروں کی مخالفت کرنےکی وجہ پوچھی تو یاسرحسین نے کہا موبائل کمپنی کی برانڈ ایمبیسیڈر بن کر ترک اداکارہ نے جو پیسے کمائے دراصل ان  پیسوں پر ہماری اداکاراؤں کا حق ہے۔

یاسر حسین نے  کہا ترک اداکارہ پاکستان آئے، یہاں ایک سال کام کرے، محنت کرے جس طرح ہماری اداکارائیں کرتی ہیں اس کے بعد انہیں پاکستانی برانڈ کا ایمبیسیڈر مقرر کیا جائے۔

انٹرویو کے دوران یاسر حسین نے مزید کہا اگر ترک اداکارہ پاکستان آکر کام کرتی ہیں تو میں ان کے سیٹ پر جاکر انہیں کھانا بھی کھلاؤں گا اور ان کے ساتھ تصویر بھی کھنچواؤں گا۔ لیکن میں پاکستانی کرکٹ لیگ پی ایس ایل کے برانڈ ایمبیسیڈر میں اپنے لوگوں کو دیکھنا چاہتا ہوں۔ انوشے اشرف نے یاسر حسین کی اس بات پر کہا کہ پی ایس ایل میں انٹرنیشنل کھلاڑی بھی تو کھیلتے ہیں تو اس کی برانڈ ایمبیسیڈر ایک انٹرنیشنل فنکارہ کیوں نہیں ہوسکتی؟

جس پر یاسر حسین نے کہا کہ وہ گیم ہی انٹرنیشنل کرکٹرز کی ہے جب وہ لوگ یہاں آتے ہیں تو ہمارے کھلاڑیوں کو سیکھاتے ہیں ہمیں اس سے فائدہ ہوتا ہے۔ لیکن حلیمہ کو اسٹار ہی ہم نے بنایا ہے لہذٰا حلیمہ سلطان کو پی ایس ایل کا برانڈ ایمبیسیڈر بناکر ہمیں  بین الاقوامی طور پر کیا فائدہ ہورہا ہے۔ حلیمہ کی جگہ انجلینا جولی کو لائیں اور اس کے بعد ہماری کرکٹ امریکا میں دیکھی جائے تو ہمیں فائدہ ہے۔

واضح رہے کہ چند روز قبل پی ایس ایل فرنچائز پشاور زلمی کے بانی جاوید آفریدی نے پاکستان میں ترک ڈرامے کی مقبولیت کے پیش نظر ڈرامے کی ہیروئن اسریٰ بلجک کو پشاورزلمی کا برانڈ ایمبیسیڈر بنانے کا عندیہ دیا تھا۔