معاشی جنگ ،فرانس نے تاریخ میں پہلی بار امریکا اور آسٹریلیا سے اپنے سفیرواپس بلا لئے

Jean-Yves Le Drain,french minister for eu addresses press confernce
Jean-Yves Le Drain, french minister for eu

 ویب ڈیسک : امریکا کی بالادستی کی جنگ معاشی جنگ میں بدل گئی فرانس نے  تاریخ میں پہلی بار امریکا اور آسٹریلیا سے اپنے سفیر فوری طور پر واپس  بلالئے۔

 رپورٹ کے مطابق آبدوز معاہدے کی منسوخی کے ردعمل میں  دونوں بڑے ممالک سے سفیر واپس بلانے کے غیر معمولی اقدام سے فرانس کا اپنے اتحادیوں کے خلاف شدید غصے کا اظہار ہوتا ہے۔فرانس کے وزیر خارجہ ژاں یوس لی ڈریان نے کہا ہے کہ صدر ایمانوئیل میکخواں نے آسٹریلیا کی جانب سے فرانس کے ساتھ آبدوزوں کی خریداری کا معاہدہ ختم کر کے امریکہ سے ڈیل کرنے پر اپنے سفیروں کو واپس بلانے کا فیصلہ کیا ہے۔  انہوں نے سفیروں کو فوری واپس بلانے کے فیصلے کی وجہ ’15 ستمبر کو آسٹریلیا اور امریکا کے درمیان معاہدے کے اعلان پر غیر معمولی سنجیدگی‘ کا اظہار ہے۔ان کا کہنا تھا کہ اوشن کلاس آبدوز کے معاہدے پر فرانس اور آسٹریلیا سنہ 2016 سے کام کر رہے تھے اور اب اس طرح کرنا ’اتحادیوں اور پارٹنرز کے مابین ناقابل قبول رویہ‘ ہے۔ یادرہے کہ بدھ کو امریکی صدر جو بائیڈن نے آسٹریلیا، امریکا اور برطانیہ کے نئے دفاعی اتحاد کا اعلان کیا تھا جس کے تحت امریکی ایٹمی آبدوز ٹیکنالوجی آسٹریلیا کو منتقل کی جائے گی۔ اس کے علاوہ آرٹیفیشل انٹیلی جنس اور سمندر کے نیچے صلاحیت کا حامل سائبر دفاعی نظام بھی فراہم کیا جائے گا۔  دوسری طرف فرانس نے کورونا ایس او پیز کی خلاف وزری اور بریگزٹ کا بہانہ بنا کر برطانیہ کے بڑے اسٹور مارک اینڈ اسپنسرز کو نوٹس جاری کردیاجس کےبعد مارک اینڈ اسپنسرز نے فرانس میں 11 اسٹورز۔ بند کردئیے۔