اہم خبر؛عدالت نے وزیراعظم کے معاون خصوصی کے طور پرحنیف عباسی کوکام سے روک دیا

اہم خبر؛عدالت نے وزیراعظم کے معاون خصوصی کے طور پرحنیف عباسی کوکام سے روک دیا
کیپشن: Hanif Abbasi
سورس: Google
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

ویب ڈیسک:اسلام آباد ہائیکورٹ نے حنیف عباسی کو آئندہ سماعت تک وزیراعظم کے معاون خصوصی کے طور پر کام سے روک دیا، چیف جسٹس اطہر من اللّٰہ نے ریمارکس دیئے کہ اگر کوئی سزا یافتہ ہو تو وہ پبلک آفس ہولڈ نہیں کرسکتا۔

چیف جسٹس اسلام آباد ہائیکورٹ جسٹس اطہر من اللّٰہ نے حنیف عباسی کے عہدے سے متعلق شیخ رشید کی درخواست پر سماعت کی۔حنیف عباسی کی جانب سے احسن بھون ایڈووکیٹ عدالت میں پیش ہوئے اور اپنے دلائل میں کہا کہ میں عدالت کی معاونت کروں گا، معاون خصوصی کا عہدہ دیگر پبلک آفسز جیسا نہیں ہے۔

عدالت نے کہا کہ معاون خصوصی کا کام وزیراعظم کو مشورہ دینا ہوتا ہے جو بغیر نوٹی فکیشن بھی دے سکتے ہیں۔چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہا کہ امید ہے آئندہ سماعت تک حنیف عباسی عوامی عہدہ استعمال نہیں کریں گے، کیوں کہ ایک سزا یافتہ شخص پبلک عہدہ استعمال نہیں کرسکتا۔احسن بھون ایڈووکیٹ نے کہا کہ ایسا آرڈر نہ کریں، یہ تو حتمی ریلیف ہوجائے گا۔

ہائیکورٹ نے کیس کی مزید سماعت 27مئی تک ملتوی کردی ۔