فیس بک کا دوہرا معیار،  فٹبالر نیمار کو خاتون کی عریاں تصاویرپوسٹ کرنیکی اجازت

فیس بک کا دوہرا معیار،  فٹبالر نیمار کو خاتون کی عریاں تصاویرپوسٹ کرنیکی اجازت
PSG striker Neymar

ویب ڈیسک : فیس بک سیلیبرٹیز کو خصوصی پروٹوکول دے رہی ہے بعض کے لیے  قانون بدل دئیے۔ برازیلین فٹ بالر نیمار  کو اس خاتون کی عریاں تصاویر پوسٹ کرنے کی اجازت دی گئی جس نے ان پر زیادتی کا الزام لگایا تھا۔

برازیلین فٹ بال اسٹار نیمار نے 2019 میں عصمت دری کے الزامات کا جواب دیتے ہوئے فیس بک اور انسٹاگرام پر ویڈیوز پوسٹ کرتے ہوئے اپنا دفاع کیا، جس میں ناظرین کو خود پر الزام لگانے والی خاتون کے ساتھ واٹس ایپ چیٹ دکھائی گئی۔ واٹس ایپ کلپس میں الزام لگانے والے کا نام اور اس کی عریاں تصاویر شامل تھیں۔

یادرہےانسٹاگرام اور واٹس ایپ فیس بک کی ملکیت ہیں۔ ویڈیو کو ہٹانے سے پہلے فیس بک اور انسٹاگرام پر 56 ملین بار دیکھا گیا۔ ان پر الزام لگانے والی خاتون کو برازیل میں دھوکہ دہی، بھتہ خوری اور بہتان کے الزامات کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ غیبت اور بھتہ خوری کے الزامات کو 2019 میں خارج کر دیا گیا اور وہ 2020 میں دھوکہ دہی کے الزام سے بری ہو گئیں۔

وال اسٹریٹ جرنل  کی رپورٹ کے  مطابق فیس بک کا "XCheck" یا "CrossCheck" سسٹم معروف صارفین جیسے مشہور شخصیات، سیاست دانوں اور صحافیوں کی پوسٹس کے جائزے کو ایک الگ سسٹم میں لے جاتا ہے۔ پروگرام کے تحت کچھ صارفین کو "وائٹ لسٹ" کیا جاتا ہے، جو فیس بک  کے قوانین کی زد میں نہیں  آتے۔

فیس بک کے قوانین کی خلاف ورزی کرنے والے مواد کو پوسٹ کرنے کی اجازت ہے اور اسے ریویو بھی نہیں کیا جاتا۔ ایسے لوگ جو "خبروں کے قابل" ، "بااثر یا مقبول" یا "PR رسکی" جیسے معیار پر پورا اترتے ہیں، انہیں XCheck کی فہرست میں رکھا جاتا ہے، ان کی خصوصی جانچ پڑتال کی جاتی ہے۔رپورٹ کے مطابق  2020 تک XCheck کی فہرست میں 5.8 ملین صارفین تھے۔