سسرالیوں کے گھر آیا نوجوان قتل

سسرالیوں کے گھر آیا نوجوان قتل

(عابد چودھری)لاہور کے علاقہ کاہنہ میں سسرالیوں کے گھر آیا نوجوان کے قتل ہوگیا۔پولیس نے متوفی کے سسر کی مدعیت میں نامعلوم ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق   کاہنہ میں سسرالیوں کےگھر آنے والا نوجوان قتل ہوگیا،ایس پی ماڈل ٹاؤن دوست محمد نے جائے وقوعہ کا دورہ کیا، فرانزک ٹیموں نے جائے وقوعہ سے شواہد اکٹھے کر لیے ہیں، پولیس نے متوفی کے سسر کی مدعیت میں نامعلوم ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا، ملزمان کی تلاش کے لئے ٹیمیں تشکیل دے دیں،ایس پی ماڈل ٹاؤن دوست محمد  کا کہناتھا کہ ملزمان جلد پولیس کی گرفت میں ہوں گے۔

قبل ازیں باغبانپورہ میں گھریلوناچاقی پرشوہرکےہاتھوں بیوی قتل ہوگئی، 40سالہ طاہرہ کوشوہر عمران نےسرپربھاری چیزمارکرقتل کیا،پولیس نے ملزم عمران کوگرفتارکرلیا،آلہ قتل برآمدکرلیا، ملزم عمران نشےکاعادی،اکثرگھرمیں لڑائی جھگڑارہتاتھا،پولیس نے خاتون کی لاش کومردہ خانے متنقل کردیا، ملزم سے مزید تحقیقات کی جارہی ہیں۔

 پنجاب پولیس پر حکومت کی نوازشات اور سب سے زیادہ وسائل ہونے کے باوجود لاہور سمیت صوبے بھر میں ڈاکووں اور چوروں کی لوٹ مار گذشتہ سال کی نسبت دگنی ہو گئی،بزدارسرکارکے محفوظ پنجاب کے دعوے اُلٹ ثابت ہونے لگے ہیں۔باقی محکموں سے تنخواہیں اضافی ہونے اور سواکھرب سے زائد کابجٹ ہونے کے باوجودپھربھی پولیس شہریوں کوتحفظ دینے میں ناکام ، پولیس کے اعدادوشمارکے مطابق پنجاب میں روزانہ11افراد کوبے دردی سے قتل کیاجارہاہے۔

شہر میں قتل وغارت اور مختلف جرائم میں اضافہ معمول بن چکا ہے اور پولیس ایسے عناصر کو عبرتناک انجام تک پہنچانے کے لئے سرگرم ہے۔ لاہور پولیس نے شہر میں ڈکیتی مزاحمت پر قتل اور زخمی کرنے والے ایک سے زائد گروہوں کی تصدیق کی۔ سرعام فائرنگ سے خوف وہراس پھیل چکا جبکہ شاہراہیں، گلیاں اور محلےغیر محفوظ ہوکر رہ گئے ہیں۔