ماڈل کورٹس میں مقدمات کی تیز ترین سماعت کا سلسلہ جاری

ماڈل کورٹس میں مقدمات کی تیز ترین سماعت کا سلسلہ جاری

(ملک اشرف)لاہور سمیت ملک بھر کی 465 ماڈل کورٹس نے آج مجموعی طور پر 314 مقدمات کا فیصلہ کیا، 2مجرم کو سزائے موت5کو عمر قید کی سزا سنائی گئی۔

ایک سو بیاسی ماڈل کریمینل ٹرائل کورٹس نے قتل کے22اور منشیات کے48مقدمات یعنی70مقدمات کا فیصلہ سنا دیا۔ تمام عدالتوں نے کل429گواہان کے بیانات قلمبند کیے۔  پنجاب میں قتل کے7اور منشیات کے21مقدمات کا فیصلہ ہوا۔ 2مجرم کو سزائے موت5کو عمر قید کی سزا سنائی گئی جبکہ دیگر11 مجرمان کو کل8سال8 ماہ 32 دن قید اور1961100روپے جرمانہ کی سزا سنائی گئی۔

اسی طرح پاکستان بھر میں قائم ہونے والی125سول ایپلٹ ماڈل کورٹس نےمجموعی طور پر 95دیوانی، فیملی اور رینٹ اپیلوں و درخوست نگرانی کے فیصلے کر دیے۔ 158 ماڈل مجسٹریٹس عدالتوں نے149مقدمات کے فیصلے کر دیے۔ تمام عدالتوں نے306گواہان کے بیانات قلمبند کیے۔مجموعی طور پر 51مجرمان کو 7سال،16ماہ اور90دن قید اور 1132000روپے جرمانہ کی سزا سنائی گئی۔

Malik Sultan Awan

Content Writer