اگلے آرمی چیف کا فیصلہ کون کرے گا? خورشید شاہ نے بتادیا

syed khurshid ahmad shah PPP leader & federal minister
کیپشن: syed khurshid ahmad shah PPP
سورس: google
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

  ویب ڈیسک : پاکستان پیپلزپارٹی کے سینیئر رہنما اور وفاقی وزیر سید خورشید احمد شاہ نے کہا ہے کہ اگلے آرمی چیف کا فیصلہ موجودہ حکومت ہی کرے گی۔

وفاقی وزیر برائے آبی وسائل سید خورشید احمد شاہ نے غیرملکی میڈیا  کو دیے گئے خصوصی انٹرویو میں کہا کہ آرمی چیف کی تعیناتی کے معاملے پر تاحال مشاورت نہیں ہوئی، وزیراعظم اس حوالے سے جون کے بعد مشاورت کریں گے۔آرمی چیف کی مدت ملازمت نومبر میں پوری ہورہی  ہے۔ دو ماہ پہلے نئے آرمی چیف کی تعیناتی کا فیصلہ کرنا ہوتا ہے اس لیے وہ تو اس حکومت میں ہی ہوگا۔ نئے آرمی چیف کا فیصلہ جو بھی ہوگا وہ یہی حکومت کرے گی۔اس حوالے سے ابھی مشاورت نہیں ہوئی، اس میں ابھی وقت ہے جون کے بعد ہی اس پر بات ہوگی۔ یہ وزیراعظم کا دائرہ اختیار ہے کہ وہ کیا فیصلہ کرتے ہیں۔ وزیراعظم اتحادیوں سے مشاورت کریں گے لیکن یہ فیصلہ وزیراعظم نے کرنا ہے۔

آئندہ انتخابات سے متعلق سوال پر وفاقی وزیر نے کہا کہ عام انتخابات نومبر دسمبر میں ہو جانے چاہیں۔عام انتخابات کب کروانے ہیں اس س سے متعلق الیکشن کمیشن سے مشاورت ہوگی کہ وہ کس حد تک تیار ہیں۔ کچھ ترامیم ہونی ہیں، جو غیر قانونی طریقے سے بل پاس کروائے گئے ہیں ان کو دیکھا جائے گا پھر نئے انتخابات کے حوالے سے فیصلہ کیا جائے گا۔ وفاقی وزیر خورشید شاہ نےکہا کہہ سکیورٹی اور الیکشن کے دیگر لوازمات میں اسٹیبلشمنٹ ے مشاورت ہوسکتی ہے۔ الیکشن کرانا، نا کرنا، کب کرانا ہے یہ سیاستدانوں کا فیصلہ ہے اور الیکشن کمیشن کا کام ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ الیکشن کمیشن مکمل طور پر آزاد ہے اور اس کا کریڈٹ عمران خان کو جاتا ہے۔اگر کوئی ادارہ عمران خان کی حمایت کرتا ہے تو وہ ٹھیک ہے اور وہ نیوٹرل ہوجائے تو وہ ان کو جانور بنا دیتا ہے۔ الیکشن کمیشن کو آزاد بنانے کا کریڈٹ عمران خان کو جاتا ہے کیونکہ چیف الیکشن کمشنر کا نام انہوں نے تجویز کیا یہ اس کی بدقسمتی ہے کہ وہ اپنے کریڈٹ کو ڈس کریڈٹ کر رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ پہلے کبھی ہم نے آزاد الیکشن کمیشن دیکھا نہیں۔ کسی نا کسی کے دباؤ میں آتا رہتا ہے اور اس کا بھی کریڈٹ عمران خان کو جاتا ہے ہمیں ماننا چاہیے۔

سابق وزیراعظم عمران خان کی جانب سے جلسوں میں اسٹیبلیشمنٹ کے حوالے سے دفاعی انداز اپنانے سے متعلق سوال پر انہوں نے مختصر جواب دیتے ہوئے کہا کہ عمران خان پہلے ڈراتے ہیں پھر خود ڈر جاتے ہیں۔وزیراعظم شہباز شریف کے دورہ لندن سے متعلق سوال پر خورشید شاہ نے کہا یہ مسلم لیگ ن کا اندرونی معاملہ ہے۔