لاہور میں گرین الیکٹرک بسیں چلانے کا فیصلہ

لاہور میں گرین الیکٹرک بسیں چلانے کا فیصلہ
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

(سٹی42)فضا آلودگی سے پاک کرنے کا منصوبہ، لاہور میں گرین الیکٹرک بسیں چلانے کا فیصلہ کرلیا، وزیر اعلیٰ عثمان بزدار نے گرین بسز چلانے کی اصولی منظوری دیدی،اجلاس میں سموگ کےسدباب کے لئےوہیکلزانسپکشن سرٹیفکیشن سسٹم بھی فعال کرنیکافیصلہ کیاگیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدارکی زیر صدارت ٹرانسپورٹ سے متعلق خصوصی اجلاس ہوا۔وزیراعلی عثمان بزدار نے گرین الیکٹرک بسیں چلانے کی اصولی منظوری دے دی، الیکٹرک بسیں چلانے کے لیے ضروری امور جلد طہ کرنے کی ہدایت کی گئی، سموگ کے مستقل سدباب کے لئے وہیکلز انسپکشن سرٹیفکیشن سسٹم فعال کرنے کا فیصلہ بھی کیاگیا۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا کہناتھا کہ  لاہور ٹرانسپورٹ کمپنی کو پنجاب ٹرانسپورٹ کمپنی میں بدل دیا جائے گا۔وزیراعلی عثمان بزدار نے پنجاب میں ٹرانسپورٹ انسپکٹرز، سب انسپکٹر زاور سارجنٹس کی بھرتی کی بھی اصولی منظوری دے دی۔

عثمان بزدار  کا کہناتھا کہ  لاہور میں 103 کلومیٹر طویل 6 روٹس پر الیکٹرک بسیں چلائی جائیں گی۔الیکٹرک بسوں کی خریداری کے لئے مختلف آپشز پر غور کیا گیا،محکمہ ٹرانسپورٹ تمام آپشز کا جائزہ لے کر فوری حتمی سفارشات پیش کرے۔ پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت دیگر شہروں میں بھی الیکٹرک بسیں چلائی جائیں گی۔

وزیراعلیٰ پنجاب کا کہناتھا کہ  الیکٹرک بسوں سے ماحولیاتی آلودگی اور سموگ میں کمی ہوگی ۔ہر وہ کام کریں گے جس کا فائدہ عوام کو ہوگا۔انہوں نے اورنج لائن میٹرو ٹرین کے روٹ سٹیشن پر صفائی کے انتظامات بہتر بنانے کا حکم بھی دیا،ان کا کہناتھا کہ اورنج لائن میٹرو ٹرین اور سٹیشنز پر صفائی کے انتظامات پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہو گا ۔سرپرائز وزٹ کرکے اورنج لائن میٹرو ٹرین کے انتظامات کا خود جائزہ لوں گا۔

عثمان بزدار کا مزید کہناتھا کہ کوہ سلیمان کے علاقوں میں پہلی مرتبہ پبلک ٹرانسپورٹ چلائی جائے گی۔ کوٹ چھٹہ، وہوا، ٹبی قیصرانی، تونسہ اور ڈیرہ غازیخان میں کم کرائے میں بہترین ٹرانسپورٹ فراہم کریں گے۔فیصل آباد اور دیگر ڈویژن میں جدید ترین بسیں چلائی جائیں گی۔صوبائی وزیر ٹرانسپورٹ جہانزیب کھچی، سیکرٹری ٹرانسپورٹ، ٹرانسپورٹ سپیشلسٹ اور متعلقہ حکام نےاجلاس میں شرکت کی۔