کورونا کا زور ٹوٹتے ہی پاکستان میں نیا خطرناک وائرس سامنے آگیا

West Nile Virus
کیپشن: West Nile Virus
Stay tuned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

(ویب ڈیسک) شہریوں کیلئے بری خبر، کورونا کا زور ٹوٹتے ہی پاکستان میں نئے وائرس  ویسٹ نائل کے شواہد سامنے آگئے۔

طبی ماہرین نے پاکستان میں بڑی تعداد میں پرندوں کے مرنے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پرندوں کا بغیر کسی وجہ کے بڑی تعداد میں مرنا ویسٹ نائل وائرس کی وجہ سے ہو سکتا ہے۔ویسٹ نائل وائرس ڈینگی اور ملیریا کی طرح مچھروں سے پھیلتا ہے، ویسٹ نائل وائرس پھیلانے والا مچھر کیولیکس بھی پاکستان میں موجود ہے۔

ماہرین کا کہنا ہےکہ مچھروں سے پھیلنے والے وائرس سے متاثر ہونے کے بعد 20 فیصد واقعات میں بخار، دردِ سر اور قے آتی ہے تاہم ایک فیصد سے کم واقعات میں دماغ متاثر ہوتا ہے اور مریض ہلاک بھی ہوسکتا ہے۔ ویسٹ نائل وائرس سے دماغی سوزش (اینسیفلائٹس)، دماغی بافتوں کی سوجن اور گردن توڑ بخار بھی ہوسکتا ہے۔

ڈاکٹر ارم خان کا کہنا ہے کہ 2016 میں تحقیق کے ذریعے ویسٹ نائل وائرس کی پاکستان میں موجودگی ثابت کر چکے ہیں، ویسٹ نائل وائرس پولیو کی طرز کی معذوری کا سبب بن سکتا ہے۔

ڈی جی ہیلتھ پاکستان ڈاکٹر رانا محمد صفدر کا کہنا ہے کہ ویسٹ نائل وائرس کی موجودگی کی غیر مصدقہ اطلاعات ہیں، قومی ادارہ برائے صحت کو ویسٹ نائل وائرس پر تحقیقات کے لیے کہہ دیا ہے۔