رانا ثناء اللہ منشیات کیس میں بڑی پیشرفت سامنے آگئی

رانا ثناء اللہ منشیات کیس میں بڑی پیشرفت سامنے آگئی

(عابد چودھری) پاکستان مسلم لیگ( ن) کے رہنما اور سابق وزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ اوران کے خاندان کے اثاثے منجمد کرنے کا حکم دے دیا گیا، وزارت انسداد منشیات نے ڈپٹی کمشنر فیصل آباد کو تحریری حکم نامہ بھی جاری کردیا۔

ڈپٹی ڈائریکٹر وزارت انسداد منشیات کے مطابق رانا ثناءاللہ اور  انکی فیملی ممبران کے اثاثے مبینہ طور پر منشیات فروشی کو تحفظ دیکر بنانے کے شواہد ملے ہیں، رانا ثناءاللہ کے نام پر 3 پلاٹ، 15 دکانیں ہیں اور رانا ثناءاللہ کی بیوی کے نام پر ایک پلاٹ اور 5 دکانیں ہیں جبکہ انکی بیٹی اور داماد کے نام پر 4 پلاٹ اور 11 دکانیں ہیں، 6دکانیں اور 2کمرشل پلاٹ بھی رانا ثناءاللہ اور بیوی کے مشترکہ نام پر ہیں، اس کے علاوہ بھائی اور والدہ کے نام پر 2 گھر بھی ہیں۔

 ڈپٹی ڈائریکٹر وزارت انسداد منشیات کے مطابق رانا ثناءاللہ کی بیوی کے رشتہ دار کے نام پر ایک پلاٹ ہے، ڈپٹی ڈائریکٹر وزارت انسداد منشیات نے حکم نامے میں کہا ہے کہ کیس کے 2 ملزمان کی ملکیت والی جائیدادیں بھی منجمد کی جائیں جبکہ ان تمام جائیدادوں کی خرید و فروخت اور منتقلی ہرگز نہ ہونے پائے، حکم نامے کے مطابق خلاف ورزی پر سزا و جرمانہ ہوسکتا ہے۔

Sughra Afzal

Content Writer