ماڈل کورٹس نے آج 351 مقدمات کا فیصلہ کردیا

ماڈل کورٹس نے آج 351 مقدمات کا فیصلہ کردیا

(ملک اشرف) لاہور سمیت ملک بھر کی ماڈل کورٹس نے آج 351 مقدمات کا فیصلہ کیا، قتل اور منشیات کے کسی مقدمہ کے ملزم کو سزائے موت نہیں ہوئی۔

ڈی جی مانیٹرنگ ماڈل کورٹس ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج سہیل ناصر نے ججز کی کارکردگی رپورٹ مرتب کی، جس کے مطابق 173 ماڈل کریمینل ٹرائل کورٹس نے قتل کے 29 اور منشیات کے 60 مقدمات کے فیصلے کئے۔تمام عدالتوں نے کل 518 گواہان کے بیانات قلمبند کیے۔ پنجاب میں قتل کے 3 اور منشیات کے 29 کیسز کے فیصلے ہوئے ،  6 کو عمر قید کی سزا سنائی گئی دیگر 24 مجرمان کو کل 45 سال50 ماہ 30 دن قید اور 1932800 روپے جرمانہ کی سزا سنائی گئی۔

اسی طرح پاکستان بھر میں قائم ہونے والیں119 سول ایپلٹ ماڈل کورٹس نے 152دیوانی، فیملی اور رینٹ اپیلوں و درخوست نگرانی کے فیصلے کیے۔ 152 ماڈل مجسٹریٹس عدالتوں نے 110 مقدمات کے فیصلے کر دیے۔ تمام عدالتوں نے 431 گواہان کے بیانات قلمبند کیے۔مجموعی طور پر 26 مجرمان کو 21 سال 8 دن قید اور 635014 روپے جرمانہ کی سزا سنائی گئی۔