محکمہ پرائمری ہیلتھ میں بد انتظامی عروج پر پہنچ گئی

محکمہ پرائمری ہیلتھ میں بد انتظامی عروج پر پہنچ گئی

( زاہد چودھری ) محکمہ پرائمری ہیلتھ میں بدانتظامی عروج پر، کنٹریکٹ میں توسیع نہ ہونے پر 103 فزیو تھراپسٹ عید پر تنخواہ سے محروم رہ جائیں گے، انتظامیہ کی نالائقی کے سبب اپریل میں ختم ہونے والے کنٹریکٹ کی تاحال تجدید نہ کی جاسکی، فزیو تھراپسٹ ڈسٹرکٹ اور تحصیل ہسپتالوں میں بغیر تنخواہ کام کرنے پر مجبور ہیں۔

تفصیلات کے مطابق تحصیل ہسپتالوں میں کنٹریکٹ پر کام کرنے والے 55 فزیوتھراپسٹ اور ڈسٹرکٹ ہسپتالوں میں کنٹریکٹ پر کام کرنے والے 48 فزیوتھراپسٹس کے کنٹریکٹ کی مدت میں توسیع نہ ہونے سے عید الاضحٰی پر بھی تنخواہ نہیں مل سکے گی۔ اپریل 2019 میں تحصیل ہسپتالوں میں کام کرنے والے فزیوتھراپسٹس کا کنٹریکٹ ختم ہوگیا جس کی تاحال تجدید نہیں ہوسکی ہے اور تین ماہ سے زائد عرصہ سے تحصیل ہسپتالوں میں بغیر تنخواہ کام کرنے پر مجبور ہیں۔

فزیوتھراپسٹس ملازمت کے کنٹریکٹ کی تجدید کیلئے محکمہ پرائمری ہیلتھ کے چکر لگانے پر مجبور ہیں لیکن کنٹریکٹ کو توسیع دینے کا عمل سرخ فیتے کی نذر ہوچکا ہے۔ اس صورتحال کے باعث محکمہ پرائمری ہیلتھ کے فزیوتھراپسٹس کو عید الاضحٰی کے موقع پر بھی تنخواہ نہیں مل سکے گی ۔