امریکی انتخابات میں 231 سال بعدنئی تاریخ رقم

امریکی انتخابات میں 231 سال بعدنئی تاریخ رقم

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک)امریکا کے 59 ویں صدارتی انتخاب میں ڈیموکریٹک امیدوار جوبائیڈن کی کامیابی کے ساتھ ساتھ کمالہ ہیرس تاریخ کی پہلی خاتون امریکی نائب صدر بن گئی ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ڈیموکریٹس کی کمالہ ہیرس امریکا کی 231 سالہ انتخابی تاریخ میں پہلی خاتون نائب صدر ہیں اور وہ اس عہدے پر پہنچنے والی 49 ویں شخصیت ہیں۔ٹوئٹر پر اپنی پوسٹ میں انہوں نے اپنی ویڈیو شیئر کی ہے جس میں وہ جوبائیڈن کو فون پر کہ رہی ہیں کہ 'ہم نے کردکھایا، تم امریکا کے نئے صدر بننے جارہے ہو'۔

کمالہ 1984 میں ڈیموکریٹک جیرالڈین فریرو اور 2008 میں ریپبلکن سارہ پیلن کے بعد کسی بڑی جماعت کے لیے تیسری خاتون اور پہلی سیاہ فام خاتون نائب صدارتی امیدوار کی حیثیت سے انتخابات لڑرہی تھیں۔56 سالہ کمالہ ہیرس کے مقابلے میں ری پبلکن امیدوار مائیک پینس تھے،کمالہ الیکٹرز کی جانب سے جوبائیڈن کے باضابطہ انتخاب کے بعد 20 جنوری 2021کو پہلی خاتون امریکی نائب صدر کی حیثیت سے حلف اٹھائیں گی۔

 یاد رہے کہ جو بائیڈن امریکی تاریخ میں کسی بھی امریکی صدارتی امیدوار سے زیادہ ووٹ حاصل کرنے والے شخص بن گئے ہیں۔یہ امریکی انتخاب انتہائی غیر معمولی نوعیت کے تھے اور اس مرتبہ ووٹر ٹرن آؤٹ بھی انتہائی زیادہ رہا ہے۔ بائیڈن کو اب تک سات کروڑ سے زیادہ ووٹ حاصل ہو چکے ہیں اور وہ اس سے براک اوباما کے ریکارڈ چھ کروڑ 94 لاکھ ووٹروں کو پچھے چھوڑ چکے ہیں۔

واضح رہے کہ کمالہ ہیرس کی والدہ کا تعلق بھارتی ریاست تامل ناڈو سے ہے جب کہ ان کے والد ویسٹ انڈیز کی ریاست جمیکا سے تعلق رکھنے والے ایک افریقن نژاد ہیں۔کمالہ ہیرس 20 اکتوبر1964امریکی ریاست کیلیفورنیا کے شہر آکلینڈ میں پیدا ہوئیں ،وہ 2003 میں سان فرانسسکو کی اعلیٰ ڈسٹرکٹ اٹارنی منتخب کی گئیں اور 2010 اور 2014 میں کمالہ نے کیلیفورنیا کی اٹارنی جنرل کی حیثیت سے فرائض انجام دیے ۔