آٹے کے بعد چینی مافیا کیخلاف کریک ڈاؤن

آٹے کے بعد چینی مافیا کیخلاف کریک ڈاؤن

(قیصر کھوکھر)صوبے بھر میں چینی کے ذخائر اورذخیرہ اندوزوں کیخلاف فوری کریک ڈاؤن کی حکمت عملی کے جائزے کیلئےاجلاس منعقد ہوا،صوبے میں موجودچینی کے15لاکھ66ہزارچار سو ننانوے میٹرک ٹن ذخائر کا جائزہ لیا گیا.

اجلاس میں ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ،انڈسٹریز، آبپاشی، خوراک، زراعت کے محکموں کے سیکرٹریز، کمشنر لاہور، سی سی پی او کے علاوہ تمام کمشنرز اور آرپی اوز نے ویڈیو لنک کے ذریعے شرکت کی،صوبے میں موجودچینی کے15لاکھ66ہزارچار سو ننانوے میٹرک ٹن ذخائر کا جائزہ لیا گیا اور اس پر اطمینان کا اظہار کیا گیا۔

اجلاس میں ماہ رمضان کے پیش نظر کسی قسم کی ذخیرہ اندوزی روکنے کیلئے سخت ترین ایکشن لینے کا فیصلہ کیا گیا جبکہ تمام شوگر ملزمالکان سٹاک ڈکلیئر کرنے کے پابند ہونگے اور خلاف ورزی کے مرتکب مالکان کے خلاف سخت قانونی اور انتظامی کارروائی کا فیصلہ کیا گیا،چیف سیکرٹری نے ہدایت کی کہ تمام انتظامی اور پولیس افسران ذخیرہ اندوزوں اور سٹے بازوں کےخلاف ایکشن کیلئے تیار رہیں۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ چاروں صوبائی وزراء اپنے متعلقہ سیکرٹریز اور ماہرین کیساتھ ملکر مستقبل میں فصلوں کی کاشتکاری بارے حکمت عملی تیار کریں گے۔

علاوہ ازیں اجلاس میں چیف سیکرٹری پنجاب میجر (ر) اعظم سلیمان خان کے ہمراہ چار صوبائی وزراء انڈسٹریز محمد اسلم اقبال، آبپاشی محمد محسن لغاری، زراعت نعمان لنگڑیال اور خوراک سمیع اللہ چودھری نےشرکت کی ۔