پائیدار ترقی کے اہداف حاصل کرنے میں 8 سال باقی ہیں ،صدر مملکت

پائیدار ترقی کے اہداف حاصل کرنے میں 8 سال باقی ہیں ،صدر مملکت
کیپشن: Arif Alvi
سورس: Google
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

ویب ڈیسک:2030 کے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ پائیدار ترقی کے اہداف حاصل کرنے میں 8 سال باقی ہیں۔

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے عالمی یوم ماحولیات پر اپنے پیغام میں کہا کہ موسمیاتی تبدیلی کے منفی اثرات سے بچنے کے لیے پائیدار طرز زندگی اپنانے کی ضرورت ہے اور زمین کو بچانے کے لیے زرخیز مٹی کی حفاظت یقینی بنانا ہو گی۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان تیزی سے پگھلتے گلیشیئرز، غیر متوقع بارشوں اور خشک سالی سے متاثر ہوا اور پاکستان موسمیاتی تبدیلیوں سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ممالک میں شامل ہے۔ موسمیاتی تبدیلیوں سے حکومت اور پاکستانی عوام کو شدید چیلنجز درپیش ہیں۔

ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ نوجوانوں کو ماحولیاتی تبدیلی کے چیلنج سے نمٹنے کے حوالے سے تعلیم دینے کی ضرورت ہے اور بہتر مستقبل کے لیے ماحول دوست طرز زندگی اپنانا ہو گی۔ ایوان صدر دنیا کے ماحول دوست صدارتی دفاتر میں پہلی پوزیشن پر ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایوانِ صدر ایک میگاواٹ کے سولر پاور سے بجلی کی ضروریات پورا کرتا ہے اور منصوبے سے قومی گریڈ میں بھی بجلی دیتا ہے۔ تمام اداروں کو دعوت دیتا ہوں کہ وہ گرین پریذیڈنسی منصوبے سے سیکھیں۔ توانائی کی بچت کریں تاکہ مؤثر انداز میں عوام کی خدمت کی جا سکے۔

صدر مملکت نے کہا کہ موسمیاتی تبدیلی کے چیلنج سے نمٹنے کے لیے طویل مدتی منصوبہ بندی جبکہ جنگلات، جنگلی حیات اور حیاتیاتی تنوع کے شعبوں کو بہتر کرنے کی ضرورت ہے۔ پائیدار ترقی کے 17 اہداف میں سے کئی کو پورا کرنے میں صحت مند ماحول کا کلیدی کردار ہے۔

انہوں نے کہا کہ 2030 کے پائیدار ترقی کے اہداف حاصل کرنے میں 8 سال باقی ہیں جبکہ موسمیاتی تبدیلی اور حیاتیاتی تنوع کی تباہی سے بچانے کے لیے کوششیں کرنے کی ضرورت ہے۔