گڑھی شاہو میں نوجوان کا بے دردی سے قتل

Youngster killed in Garhi Shahu
murder

(عابد چودھری)گڑھی شاہو میں نوجوان کا قتل، نامعلوم افرد فائرنگ کرکے مقتول کی لاش کچرے کے ڈرم کے قریب پھینک کر فرار ہوگئے، پولیس نے مقدمہ درج کرکے تحقیقات کا آغاز کردیا۔

 پولیس کے مطابق گڑھی شاہو میں نامعلوم افراد نے قاسم نامی نوجوان کو فائرنگ کر کے قتل کیا، ملزمان مقتول کی لاش جامعہ نعیمیہ کے قریب کچرے کے ڈرم کے نزدیک پھینک کر فرار ہوئے فائر قاسم کے سینے پر لگا، پولیس اور فرانزک ٹیموں نے موقع سے شواہد اکٹھے کرلیے ہیں، پولیس کا کہنا ہے کہ واردات کا مقدمہ درج کر کے تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

واضح رہے کہ معاشرے کی عمارت  برداشت، اخلاقیات، رواداری  اور محبت کے ستونوں پر کھڑی ہوتی ہے اور جب یہ خصوصیات سماج سے رخصت ہوجائیں تو وہ تباہی کی طرف تیزی سے گامزن ہوجاتا ہے، بدقسمتی سے دنیا بھر میں عدم برداشت دن بدن بڑھتا جارہا ہے، یہ عدم برداشت آج ہمیں اس نہج پہ لے آیا کہ چھوٹے سے چھوٹے اختلافات پر خون بہنے لگا ۔

عدم برداشت کے بڑھتے ہوئے خوفناک رحجان کی وجہ سے دنیا بھر میں تشدد قتل وغارت کے واقعات میں اضافہ ہورہا ہے، یوں دکھائی دیتا ہے جیسے افراد کی اکثریت کی قوت برداشت ختم ہوچکی ہے اور رواداری جیسی اعلیٰ صفت معاشرے سے عنقا ہوچکی ہے۔

دوسری جانب ماہرین نفسیات کا کہنا ہے کہ عدم برداشت کسی بھی جرم کی سب سے بنیادی وجہ ہے، اگر صرف برداشت کی صلاحیت کو مضبوط کر لیا جائے تو کسی بھی معاشرے سے 90فیصد جرائم کا خاتمہ ہو سکتا ہے۔ یہ بات حقیقت کے بالکل قریب ہے کیونکہ ہر جرم کی داستان کے پیچھے عدم برداشت کا عنصر نمایاں نظر آتا ہے۔