سری لنکا اور عوام کو وزیراعظم عمران خان پر یقین ہے:سری لنکن وزیراعظم

سری لنکا اور عوام کو وزیراعظم عمران خان پر یقین ہے:سری لنکن وزیراعظم

  ویب ڈیسک : سیالکوٹ وزیر آباد روڈ پر مبینہ توہین مذہب پر نجی فیکٹری کےمینیجر کو مشتعل ہجوم کی  جانب سے  تشدد ہلاک کر نے کادلخراش واقعہ ،وزیر اعظم کی  جانب سے اظہار افسوس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ  ہجوم کی طرف سے سری لنکن منیجر کو حملے کے دوران زندہ جلانا پاکستان کے لیے باعث شرم ہے۔ سری لنکن وزیراعظم نے کہا ہے کہ سری لنکا اور عوام کو وزیراعظم عمران خان پر یقین ہے

 سیالکوٹ وزیر آباد روڈ پر مبینہ توہین مذہب پر نجی فیکٹری کےمینیجر کو مشتعل ہجوم نے تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے ہلاک کر دیا، مشتعل افراد نے فیکٹری کا گھیراؤ کیا اور وزیر آباد روڈ ٹریفک کے لئے بند کر دیا تھا۔

سری لنکن وزیراعظم نے کہا ہے کہ سری لنکا اور عوام کو وزیراعظم عمران خان پر یقین ہے، یقین ہے عمران خان ذمہ داروں کو کٹہرے میں لائیں گے۔ سری لنکن وزیراعظم مہندا راجا پاکسے نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا کہ سری لنکن منیجر کے پاکستان میں قتل پر صدمے میں ہوں، میری ہمدردی سری لنکن منیجر کے اہلخانہ کیساتھ ہے، یقین ہے عمران خان ذمہ داروں کو کٹہرے میں لائیں گے

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ سیالکوٹ واقعے میں ملوث تمام ذمہ داروں کو قانون کے مطابق سخت سزا دی جائے گی۔ وزیراعظم عمران خان نے اپنے ٹویٹر پیغام میں لکھا کہ سیالکوٹ میں فیکٹری میں ہجوم کی طرف سے سری لنکن منیجر کو حملے کے دوران زندہ جلانا پاکستان کے لیے باعث شرم ہے۔ میں اس واقعے کی تحقیقات کی نگرانی کر رہا ہوں۔ انہوں نے ہدایت کرتے ہوئے لکھا کہ کوئی غلطی نہ ہونے دیں، تمام ذمہ داروں کو قانون کے مطابق سخت سزا دی جائے گی۔ واقعے میں ملوث افراد کی گرفتاریاں جاری ہیں۔

 سری لنکن وزارت خارجہ کا کہنا تھا کہ  پاکستان میں سری لنکن ہائی کمیشن کو  واقعہ کی ابتدائی رپورٹ موصول ہوگئی ہے جس کا جائزہ لے رہے ہیں ،  ہم امید کرتے ہیں کہ واقعہ میں  ملوث افراد کیخلاف سخت قانونی کارروائی  کی جائے گی۔

آئی ایس پی آر  کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق آرمی چیف  نے کہا کہ سیالکوٹ میں ہجوم کے ہاتھوں سری لنکن شہری کے قتل کی شدید مذمت کرتے ہوئے واقعے کو شرمناک قرار دیا ہے۔ آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف نے کہاکہ اس طرح کے ماورائے عدالت واقعات کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا ۔جنرل قمر جاوید باجوہ نے سول انتظامیہ کو ہر ممکن مدد فراہم کرنے کی ہدایت کی تاہم اس گھناؤنے جرم میں ملوث افراد کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جا سکے ۔

اپوزیشن لیڈ ر شہباز شریف نے سیالکوٹ میں انتہائی ہولناک اور دل دہلا دینے والا واقعے کی مذمت اور حوصلہ شکنی کی جانی چاہیے، ذمہ داروں کو قانون کے مطابق حساب دینا چاہیے۔ وقت آگیا ہے ہم اپنے پیارے نبی ﷺ کے امن، ہمدردی، محبت اور رحمت کے پیغام پر عمل کریں۔ 

مریم نواز نےٹویٹر  پیغام پر لکھا کہ سیالکوٹ میں ہونے والے دلخراش واقعہ نے دل چیر کے رکھ دیا۔ کیا یہ درندگی ہماری پہچان اور ہمارا اور آنے والی نسلوں کامستقبل ہے؟ انہوں نے مزید کہا کہ یہ ملک ایک محفوظ ملک تصور ہو گا ؟ حکومت نام کی کوئی چیز موجود نہیں، انسان سوال کرے بھی تو کس سے کرے؟

ماڈل ٹاؤن مسلم لیگ ن سیکرٹریٹ میں لیگی رہنماؤں کے ساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئےسینئر رہنما خواجہ سعد رفیق نے کہاہے کہ سیالکوٹ کا واقعہ عدم برداشت کی واضح مثال ہے، ریاست کے طاقتور حلقے جب تک جھتے بنا کر حکومتیں گرائیں گے اس طرح کے واقعات ہوتے رہیں گے، پاکستان کو پر امن ملک بنانے کئے جنگل کا قانون ختم کرنا ہوگا، ورنہ جنہوں کا کوئی مقابلہ نہیں کر سکےگا ۔