لڑکی سے لڑکی کی شادی ،حقیقت سے پردہ اٹھ گیا

لڑکی سے لڑکی کی شادی ،حقیقت سے پردہ اٹھ گیا

 سٹی 42: لڑکی سے لڑکی کی شادی ،حقیقت سے پردہ اٹھ گیا ۔ دولہا عاصمہ علی عرف آکاش علی نے میڈیکل ٹیسٹ کرانے کی بجائے اپنی بیوی نیہا کو طلاق دے دی۔

راولپنڈی میں لڑکی سے لڑکی کی شادی کے معاملے پر دلہن نیہا کے والد نے لاہور ہائیکورٹ راولپنڈی بینچ سے رجوع کیا تھا۔ دولہا آکاش علی (عاصمہ علی) نے عدالت میں موقف اپنایا تھا کہ وہ جنس تبدیل کراکے مرد بن چکا ہے۔ عدالت کی جانب سے میڈیکل ٹیسٹ کا حکم دیا گیا تو آکاش علی نے یہ کہہ کر ٹیسٹ کرانے سے انکار کردیا کہ اسے کورونا ہوگیا ہے۔ عدالت نے مزید مہلتے دیتے ہوئے عاصمہ علی کا ٹیسٹ کرنے کا حکم دیا تو اس نے عدالتی حکم پر عمل کرنے کی بجائے اپنی بیوی نیہا علی کو طلاق دے دی۔

نیہا علی کے والد کے وکیل امجد جنجوعہ ایڈووکیٹ کا کہنا ہے کہ عاصمہ علی نے میڈیکل کرانے سے انکار کرکے عدالتی حکم کی خلاف ورزی کی ، اس کے لڑکی ہونے کا دوسرا ثبوت یہ ہے کہ اس نے نیہا کو طلاق دی ہے۔ اس معاملے کو عدالت کے سامنے پیش کیا جائے گا تاکہ مناسب حکم لیا جاسکے۔

ضروری وضاحت

سٹی 42ڈاٹ ٹی وی پر ”لڑکی سے لڑکی کی شادی،حقیقت سے پردہ اٹھ گیا“ اور ”لڑکی سے لڑکی کی شادی،عدالت برہم،بڑا حکم جاری کردیا“ کے عنوانات سے دو سٹوریز  پوسٹ (شائع) کی گئی ہیں ،ان میں لگائی جانیوالی تصاویر کا سٹوریز سے کوئی تعلق نہیں،یہ  تصاویر غلطی  کی بنیاد پر لگائی گئی ہیں،جس پر  ادارہ معذرت خواہ  ہے  اور غلطی کی تصیح کردی گئی ہے۔