ایف ائی اے قومی ائرلائن پی ائی اے کے خلاف ان ایکشن

ایف ائی اے قومی ائرلائن پی ائی اے کے خلاف ان ایکشن
کیپشن: PAKISTAN INTERNATIONAL AIRLINE
سورس: Google
Stay tunned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

ویب ڈیسک : ایف آئی اے کے مطابق جعلی ڈگریوں پر بھرتی میں سہولت کاری کرنے والے پی آئی اے کے شعبہ ایچ آر کے افسران و اسٹاف ایف آئی اے کے شکنجے میں آ گئے ہیں۔

ایف آئی اے کی جانب سے جعلی ڈگریوں کی ویریفیکیشن نہ کرنے اور دھوکا دہی میں سابق ڈائریکٹر ایچ آر حنیف پٹھان، ڈائریکٹر ایچ آر وسیم باری، ڈائریکٹر ایچ آر کیپٹن سلیم احمد جی ایم ریکروٹمنٹ اینڈ ریکارڈ عاصم احمد کو ایف آئی آر میں نامزد کر لیا گیا  اور ایف آئی اے کے مطابق  پی آئی اے کے شعبہ ایچ آر کے گروپ 5 تا 8 کے 18 افسران کے نام بھی مقدمے میں شامل کیے گئے ہیں۔

ایف آئی اے نے سپریم کورٹ کے احکامات پر پی آئی اے کی 10 سالہ اسپیشل آڈٹ رپورٹ سامنے آنے پر تحقیقات کا آغاز کیا تھا۔ایف آئی اے کے مطابق  نامزد پی آئی اے کے ایچ آر شعبے کے افسران نے دھوکا دہی سے کرپشن کرکے جعلی ڈگریوں والے ملازمین کی ڈگریاں تصدیق کے لیے متعقلہ بورڈ اور یونیورسٹیز کو بھیجی ہی نہیں تھیں۔ایف آئی اے کے مطابق ملزمان پر دھوکا دہی، مس کنڈکٹ اور دیگر الزامات عائد ہیں۔

واضح رہے کہ پی آئی اے انتظامیہ کی جانب سے سپریم کورٹ کے احکامات پر جعلی ڈگریوں کی پہلے خود انٹرنل تحقیقات کی گئی تھیں جس کے بعد سیکڑوں ملازمین کو برطرف کیا گیا تھا۔