کورونا کی پانچویں لہر سے بچاؤ کیلئے سخت اقدامات کا فیصلہ

ncoc meeting
کیپشن: NCOC MEETING
سورس: google
Stay tuned with 24 News HD Android App
Get it on Google Play

ویب ڈیسک: وفاقی وزیر اسد عمر کی زیر صدارت این سی او سی کا اجلاس ، کورونا وباء کی بدلتی صورتحال، قومی ویکیسی نیشن مہم اور بیماری کے پھیلاؤ کا جائزہ لیا گیا،اجلاس میں لازمی ویکسی نیشن کے لیے سخت اقدامات لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

پاکستان میں کورونا کی پانچویں لہر نے سراٹھالیا، این سی اوسی کا کہنا ہے کہ پانچویں لہر اومی کرون تیزی سے پھیل رہا ہے،گزشتہ تین روز میں کراچی کی مثبت شرح 2 سے 6 فیصد تک پہنچ گئی،وفاقی وزیر اسد عمر کی زیر صدارت این سی او سی کا اجلاس ہوا، جس میں   لازمی ویکسی نیشن کے لیے سخت اقدامات کا فیصلہ کیا گیا، این سی اوسی کا کہنا ہے کہ پانچویں لہر سے بچنے کے لیے شہری ماسک کا استعمال اور سماجی فاصلوں کو یقینی بنائیں،اجلاس میں اضلاع کے مطابق بھی ویکسی نیشن مہم کا جائزہ لیا گیا۔

اجلاس میں ضلع وار ویکسینیشن کے اہداف کا بھی جائزہ لیا گیا اور اس بات کی تاکید کی گئی کہ صوبے ویکسینیشن کے مقررہ اہداف جلد از جلد مکمل کریں۔

واضح رہے کہ  این سی او سی کےمطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں مزید 708 کورونا کیسز رپورٹ ہوئے۔ ملک میں کورونا کیسز کی مجموعی تعداد 12 لاکھ 97 ہزار 235 ہو گئی۔ این سی او سی کے مطابق  گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں ملک بھر میں 45 ہزار 643کورونا ٹیسٹ کیے گئے اور مثبت کیسز کی شرح 1.55 فیصد رہی۔ کورونا وائرس سے مزید 2افراد جاں بحق ہو گئے جس کے بعد اموات کی مجموعی تعداد 28 ہزار 943 ہو گئی ہے۔

 پنجاب میں ابتک  13 ہزار 74افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں جبکہ سندھ میں 7 ہزار 673، خیبرپختونخوا 5 ہزار 933، اسلام آباد 967، گلگت بلتستان 186، بلوچستان میں 364 اور آزاد کشمیر میں 746 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔سندھ میں کورونا کے کیسز کی تعداد 4 لاکھ 82 ہزار826، خیبر پختونخوا میں ایک لاکھ 81 ہزار 469، پنجاب میں 4 لاکھ 45 ہزار 445، اسلام آباد میں ایک لاکھ 8 ہزار 755، بلوچستان میں 33 ہزار 644، آزاد کشمیر میں 34 ہزار 667 اور گلگت بلتستان میں 10 ہزار 429 ہو گئی ہے۔