قاتلانہ حملے کے بعد بلال یاسین کا پہلاویڈیو بیان سامنے آگیا

Attack on MPA Bilal Yaseen in Lahore
MPA Bilal Yaseen

 (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ ن کے رکن پنجاب اسمبلی بلال یاسین کا قاتلانہ حملے کے بعد  پہلا بیان سامنے آگیا۔ 

 تفصیلات کے مطابق ایم پی اے بلال یاسین نے میوہسپتال میں گفتگو  کرتے ہوئے بتایا کہ وہ معمول کے مطابق نماز جمعہ کی ادائیگی کے بعد اپنے حلقے میں گھوم رہے تھے  کہ اچانک 2 لوگ آئے ، وہ سمجھے کہ یہ پولیس والے ہیں ،انہوں نے کہا کہ مجھے نہیں پتا تھا کہ وہ مجھے مارنے آئے ہیں۔ حاجی اکرم کے گھر کے باہر میرے ساتھ ، اکرم، حاجی توحید اور حاجی لیاقت ساتھ کھڑے تھے۔ اس دوران دو نامعلوم ہنڈا ون ٹو فائیو اپ لائیو فار موٹر سائیکل پر آئے۔ 

بلال یاسین کا کہنا تھا کہ ایک شخص موٹر سائیکل سے اترا، موٹر سائیکل سوار نے مجھے مارنے کے لئے سیدھے فائر کئے، حملہ آوورں کی فائرنگ سے مجھے تین گولیاں لگیں اور  موقع سے فرار ہو گئے۔

  واضح رہے لاہور کے موہنی روڈ پر موٹر سائیکل سوار 2 نامعلوم افراد نے رکن پنجاب اسمبلی بلال یاسین پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں وہ زخمی ہوگئے تھے۔انہیں زخمی حالت میں میو ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے پولیس کے مطابق بلال یاسین کو پیٹ میں دو گولیاں اور ٹانگ میں ایک گولی لگی ہے۔ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ بلال یاسین کی حالت بظاہر خطرے سے باہر ہے لیکن آپریشن کے بعد ہی حتمی رائے دی جاسکتی ہے۔